Share Your Writing

Write your stories on Pakistan Science Club Blog!

Write your stories on Pak Science Club Blog and Portal

Featured Project

  • Telescope Construction step by step pictures
    Telescope Construction step by step pictures  telescope construction by Amjad Telescope Construction sstep by step pictures Amjad live in village Haryankot Malakand KPK. He made this telescope with his friend we…
  • Build Water Rocket for Competition
    Build Water Rocket for Competition Build your own Water Rocket for your Science Fair Project Competition This water rocket design is very efficient and and simple to made,this rocket for…
Tuesday, 24 January 2012 14:46

فصل جلد تیار کی جا سکے گی، نئی تحقیق

Rate this item
(0 votes)
اتوار کے روز برطانوی اور جاپانی سائنسدانوں نے ایک ایسا طریقہ دریافت کر لینے کا اعلان کیا جس کے ذریعے اب فصل جلد تیار کی جا سکے گی اور ایسی فصل ماحولیاتی تبدیلی کے اثرات کو بھی برداشت کر سکے گی۔ اتوار کے روز برطانوی اور جاپانی سائنسدانوں نے ایک ایسا طریقہ دریافت کر لینے کا اعلان کیا جس کے ذریعے اب فصل جلد تیار کی جا سکے گی اور ایسی فصل ماحولیاتی تبدیلی کے اثرات کو بھی برداشت کر سکے گی۔

اس نئی تحقیق سے سب سے پہلے فائدہ جاپان کے وہ کسان اٹھا سکیں گے جن کی چاول کی فصلیں گزشتہ برس سونامی کی تباہ کاریوں کی وجہ سے تباہ ہو گئی تھیں۔

نئی تحقیق جینیاتی تبدیلی کیے بغیر ڈی این اے کے ان حصوں کی طرف نشاندہی کرتی ہے جو کہ پودے کی بعض خصوصیات کا محرک ہوتی ہیں۔ اس تحقیق کو سامنے رکھتے ہوئے ماہرین آزمودہ ذرائع کے ذریعے فصل کو نہ صرف بہتر بنا سکیں گے بلکہ یہ فصل کم وقت میں بھی تیار کی جا سکے گی۔

تحقیق جینیاتی تبدیلی کیے بغیر ڈی این اے کے ان حصوں کی طرف نشاندہی کرتی ہے جو کہ پودے کی بعض خصوصیات کا محرک ہوتی ہیں

یہ تحقیق اواٹے کے بائیو ٹیکنالوجی ریسرچ سینٹر کے محققین نے کی ہے۔ ان محققین کے مطابق یہ نیا عمل کاشت کاروں کے لیے فصل کی تیاری میں وقت بچانے کی وجہ بنے گا۔ روایتی طور پر کسان پودوں کی کئی اقسام اور نسلوں کے اختلاط سے ایسے نتائج حاصل کرتے ہیں جو کہ ان کی فصلوں کے لیے سود مند ہوتے ہیں، تاہم نئی تحقیق سے صرف انہی جینز پر کام کیا جا سکے گا جو کہ فصل کو بہتر بنا سکیں گے۔ اس سے ماحولیاتی تبدیلی کے فصلوں پر پڑنے والے اثرات سے بھی نمٹا جا سکے گا۔

گزشتہ اکتوبر میں اقوام متحدہ کے ادارے یو این ایف پی اے نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا تھا کہ اگلی صدی تک دنیا کی آبادی کم از کم دس بلین ہو جائے گی، اور اس کے پندرہ بلین تک پہنچنے کا بھی امکان ہے۔ محققین کے مطابق آبادی میں اضافے سے دنیا کی غذائی ضروریات میں بھی زبردست اضافہ ہوگا لہٰذا اس نوعیت کی تحقیق سے غذائی قلت پر قابو پانے میں بھی مدد مل سکے گی

Source:http://www.dw-world.de

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated.\nBasic HTML code is allowed.

1 comment

  • Comment Link Thursday, 02 February 2012 10:30 posted by Naveed Iqbal

    I want a solar energy tubewell for irrigation purpose, send me details and expenses.

Latest Blog

  • Science for Youth (S4Y) week

    The National Academy of Young Scientists in Pakistan (NAYS) is going to celebrate this first Science for Youth week in Pakistan from 14th to 20th April. The themes reflect the importance of active participation of students and researchers. The Science[…]

Science 4 Youth Science Week

Latest Video

  • Hovercraft made by PSC Members in 2006 Hovercraft made by PSC Members in 2006 at Srfaraz pilot[…]

IEEE Karachi Section Workshop and Science Fair